275

آر۔ایچ۔سی قصبہ کالا میں تعینات سٹاف کی خواتین سے بدسلوکی

آر۔ایچ۔سی قصبہ کالا میں تعینات سٹاف کی ڈیلیوری کےلئے آنے والی خواتیں سے بدسلوکی معمول 70سالہ عمررسیدہ خاتون کی میڈیا سے گفتگو ۔

انہوں نے کہا ڈیلیوری کی غرض سے بہو کے ساتھ 3/30بجے بروز ہفتہ آر ایچ سی قصبہ کالا گئی ڈیوٹی پر موجود لیڈی ڈاکٹر وحیدہ نے ڈیلیوری کے بعد 70سالہ عمررسیدہ خاتون کو کہا فرش صاف کرو .

خاتوں نے صفائی کےلئے ٹاکی(کپڑے کا ٹکڑا )مانگا تو انہوں کہا اپنے سر کا دوپٹہ اتار کر فرش صاف کرو .

بزرگ خاتون بیچاری نے سر کا دوپٹہ اتار کر خون آلود فرش کوصاف کیا پھر سرف سے تین بار اس نے اپنے سرکے ڈورہٹہ خون آلود فرش صاف کیا

اور چھٹی سے قبل 1000روپے مٹھائی کا تقاضا کیا بزرگ خاتون کے مطابق میرے بیٹے کے پاس صرف 200روپے تھے

جو انہوں نے نہیں لئے میرے بیٹے نے گھر آکر ہمسائیوں سے 800سو قرض لیکر ہسپتال عملہ کو مٹھائی دی

دوسرے دن میں نے ہسپتال جاکر ایس۔ایم او ڈاکٹر سلیم عارف کو شکایت کی تو انہوں نے مجھے ڈانتے ہوئے کہا کوئی بات نہیں

اگر فرش صاف کریا تو کون سی قیامت ٹوٹ پڑی اور ہزار روپے مٹھائی کے جواب میں انہوں کہا اگر آپ کا کیس ڈی جی خان ہوتا 15000روپے خرچ آتا اگر یہ ملتان ہوتا ڈیڑھ لاکھ خرچ ہوجاتے 1000میں ڈیلیوری مہنگی ہے کیا ؟

غیر مہذبانہ رویہ پر مقامی سماجی شخصیات ۔خالد محمود گورچانی ۔محمدرمضان ۔نواز خان جموانی ریاض خان جموانی ۔صدام خان جموانی نے شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے سی او ہیلتھ مشیر صحت حنیف خان پتافی

۔ڈپٹی کمشنر ڈیرہ غازی خان سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے انکا مزید کہنا تھا آر ایچ سی قصبہ کالا میں صفائی عملہ تعینات ہوئے کے باوجود مریضہ کے ساتھ آنے والے خواتین سے یہ سب کچھ کس لئے کرایا جاتا ہے ۔

حکام نے نوٹس نہ لیا تو ہسپتال کے سامنے شدید احتجاج کریں گے

اپنا تبصرہ بھیجیں